Yeh Taroon Bhari Raat

یہ تاروں بھری رات یہ چھپ چھپ کے ملاقات ہمیں یاد رہے گی

یہ تاروں بھری رات ہمیں یاد رہے گی

گاتے ہوئے لمحات میں پھولوں کی یہ برسات ہمیں یاد رہے گی

یہ تاروں بھری رات ہمیں یاد رہے گی

اس رات نے دکھلائی ہمیں پیار کی منزل

گھل مل کے دھڑکتے ہیں محبت بھرے دو دل

مچلے ہوئے جذبات میں ڈوبی ہوئی ہر بات ہمیں یاد رہے گی

قدموں میں بچھے جاتے ہیں چاند اور ستارے

ساتھ اپنے چلے آتے ہیں چاند اور ستارے

مہکی ہوئی یہ رات کرنوں کی یہ برسات ہمیں یاد رہے گی

بیتاب نگاہوں نے تمہیں پیار کیا ہے

مل کر نہ جدا ہوں گے یہ اقرار کیا ہے

ہاتھوں میں لئے ہاتھ کہی تم نے جو اک بات ہمیں یاد رہے گی

یہ تاروں بھری رات ہمیں یاد رہے گی

اس پوسٹ کو شیئر کریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے