یہ ہجر و وصال ہیں تمھارے

یہ ہجر و وصال ہیں تمھارے
میرے مہ و سال ہیں تمھارے
غم اور خوشی کے سب قرینے
اور اُن کے مآل ہیں تمھارے
ہر خواہشِ بے ثمر، ہماری
سب حُسن و کمال ہیں تمھارے
جو خواب و خیال میں نہیں ہیں
وہ خواب و خیال ہیں تمھارے
ایوب خاور 

اس پوسٹ کو شیئر کریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے