تمہاری یاد

تمہاری یاد
سونی سونی ،خالی خالی
اک سرمئی حویلی میں
راگ۔۔۔
ستار نے چھیڑا ہے
اک جلتی مشعل لے کر ۔شب ۔ ملنے کو آئی ہے
فانوسوں کی چھن چھن ،چھن میں
جھلمل جھلمل ،چاندنی پر
رقص ، ہوا کا جاری ہے
سوکھی چنبیلی کی اک بیل
خستہ ستون سے لپٹی ہے
اور، تھرکتی لَو کا رنگ۔لے کر لاکھوں ننھے دیپ
دل کے طاق پہ جل اُٹھے ہیں
آئی جیسے ۔۔۔
تمہاری یاد۔۔۔!!!
فرزانہ نیناں

اس پوسٹ کو شیئر کریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے