سہولت ہو اذیت ہو تمہارے ساتھ رہنا ہے

سہولت ہو اذیت ہو تمہارے ساتھ رہنا ہے

کہ اب کوئی بھی صورت ہو تمہارے ساتھ رہنا ہے

ہمارے رابطے ہی اس قدر ہیں تم ہو اور بس تم

تمہیں سب سے محبت ہو تمہارے ساتھ رہنا ہے

اور اب گھر بار جب ہم چھوڑ کر آ ہی چکے ہیں تو

تمہیں جتنی بھی نفرت ہو تمہارے ساتھ رہنا ہے

ہمارے پاؤں میں کیلیں اور آنکھوں سے لہو ٹپکے

ہماری جو بھی حالت ہو تمہارے ساتھ رہنا ہے

تمہیں ہر صبح اور ہر شام ہے بس دیکھتے رہنا

تم اتنی خوبصورت ہو تمہارے ساتھ رہنا ہے

اس پوسٹ کو شیئر کریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے