پچاس چھ لفظی کہانیاں

۱۔ پاکستان خدا ہی چلا رہا ہے۔
۲۔ استاد، دارُو، چرس سب چلیں گی۔
۳۔ تمہارا مضارع ہونا، اُنہیں منظور نہیں۔
۴۔ کاش! تم بھی کسٹم میں ہوتے۔
۵۔ آفیسر کھڑوس ہے، لاکھ مانگتا ہے۔
۶۔ آفیسر گرائیں تھا، سو بچ گیا۔
۷۔ انٹلیکچوئل نے ملک ٹھکانے لگا دیا۔
۸۔ یہاں پارسل کا خاص انتظام ہے۔
۹۔ تُو تو چلتی پھرتی بم ہے۔
۱۰۔ پڑھ کر کیا صاحب بننا ہے؟
۱۱۔ ہم نل کا پانی پینے والے۔
۱۲۔ غریب بچوں کے ساتھ نہیں کھیلو۔
۱۳۔ پڑھنے جاتے ہو یا سیاست کرنے؟
۱۴۔ رشوت نہیں، آج میرا روزہ ہے۔
۱۵۔ ’ایم اے ‘ کر کے بھی دبوں گی؟
۱۶۔ بڑی بے حیا ہے، گھونگھٹ نہِیں نکالتی۔
۱۷۔ کیا کہا! لڑکا سید نہیں ہے؟
۱۸۔ اپنے سامان کی خود حفاطت کریں۔
۱۹۔ ایک گولی ساری عمر کیلئے کافی۔
۲۰۔ کولہو کے بیل کو دِکھتا نہیں۔
۲۱۔ گاؤں میں عزت ملی، روٹی نہیں۔
۲۲۔ کتابی کیڑا، کتاب میں مرگیا۔
۲۳ بھوک سے مرا، گولی سے نہیں۔
۲۵۔ بیٹوں سے ماں نہ پل پائی۔
۲۶۔ زمیں بیچی، گاؤں سے نکل گیا۔
۲۷۔ آخری بوری کھیت میں بکھیر دی۔
۲۸۔ مچھر مارنے کیلئے، گلوب ہونا چاہئے۔
۲۹۔ بیٹا پڑھنے جانا، لڑکیاں پھنسانے نہیں۔
۳۰۔ کامیاب لیڈروں کا، سر کڑھائی میں۔
۳۱۔ اسے تندرست بیلوں کے سپنے آئے۔
۳۲۔ ’’فیس بک‘‘ تو پوری پڑھی، مگر فیل۔
۳۳۔ مزدوری چھوڑو، دلالی کروں، نوٹ چھاپو۔
۳۴۔ دانت نہ آنت، پر دل جوان۔
۳۵۔ بچے بھوکے تھے، ماں بے گھر تھی۔
۳۶۔ زندگی، کہانی ہوتی تو ایڈٹ کرتے۔
۳۷۔ بیٹے نے سیکھا، ماں بھولی چلنا۔
۳۸۔ وہ خاموش رہا، خاموشی بولتی رہی۔
۳۹۔ چلنے سے پگڈنڈی بنی، منزل ملی۔
۴۰۔ آخری سگریٹ بھی پھونک ڈالی ہے۔
۴۱۔ جیون کی پوٹلی، سکھ سے خالی!
۴۲۔ چھتری کھولو، بارش ہونے والی ہے۔
۴۳۔ وہ لانگ بوٹ کیوں پہنتا ہے؟
۴۴۔ روٹی تھی، نمک تھا، ذائقہ تھا۔
۴۵۔ گھر چھوٹا نہیں، ساتھ چلتا رہا۔
۴۶۔ سامان کم تھا، سفر آسان تھا۔
۴۷، کچھ کہوں؟ نہیں۔ گفتگو ہوتی رہی۔
۴۸۔ دیوار ٹوٹتی تو گھر بن پاتا۔
۴۹۔ قاتل مجھے مار کر بہت پچھتایا۔
۵۰۔ پتنگ اڑی، کٹی۔ رنجیدہ ہوا آکاش۔

عامر صدیقی

اس پوسٹ کو شیئر کریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے