ہم ہیں سُوکھے ہُوئے شجر آقا ؐ

ہم ہیں سُوکھے ہُوئے شجر آقا ؐ
کیجئے ہم کو با ثمر آقا ؐ
ہاں بجُز آپؐ کے نہیں کوئی
ہم مریضوں کا چارہ گر آقا ؐ
آپؐ ہی غم گُسار ہیں سب کے
آپ ؐ ہیں سب کے راہبر آقا ؐ
چھوڑ کر آپؐ کا درِ اقدس
کوئی جائے بھلا کِدھر آقا ؐ
بڑھ رہی ہیں مُصیبتیں پیہم
کیجئے ہم پہ اِک نظر آقا ؐ
ماجرا کیا کہے بھلا کیفی ~
آپؐ رکھتے ہیں سب خبر آقا ؐ
محمود کیفی

اس پوسٹ کو شیئر کریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے