Hosla Khud Hathyar Banaya

حوصلہ خود ہتھیار بنایا جا سکتا ہے

شاخ کو بھی تلوار بنایا جا سکتا ہے

لوگو ۔ یہ دن راتیں کاٹنے والا دن ہے

یہ دن پھر اک بار بنایا جا سکتا ہے

تنہا تنہا پتی پتی جینے والو

یہ صحرا گلزار بنایا جا سکتا ہے

اپنی اپنی کشتی باہم جوڑ کے دیکھو

راستا دریا پار بنایا جا سکتا ہے

خیبر کے کہسار سے لے کر بحر عرب تک

جسموں کو دیوار بنایا جا سکتا ہے

راہنماؤ تم سے خلقت پوچھ رہی ہے

ہم کو کتنی بار بنایا جا سکتا ہے

سعود عثمانی

اس پوسٹ کو شیئر کریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے