گُلوں کی چھاٶں جیسا هے

گُلوں کی چھاؤں جیسا هے
دلاسه ماٶں جیسا هے
بدلتے هیں مزاج اس کے
یه دل دریاٶں جیسا هے
چمن سے بھی سلُوک اُسکا
وهی صحراٶں جیسا هے
یه میرا شهر اچھا هے
که تھوڑا گاٶں جیسا هے
فرانسس سائل

اس پوسٹ کو شیئر کریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے