Best Urdu Poetry Of Shahid Zaki | International Mushaira Bahrain

Best Urdu Poetry Of Shahid Zaki | International Mushaira Bahrain
Bayaad E Qabil Ajmeeri 27 June 2013
Anjuman Farogh E Adab Bahrain
Subscribe SalamUrdu Channel Or Visit https://www.SalamUrdu.Com for more urdu stuff…
یار بھی راہ کی دیوار سمجھتے ہیں مجھے
میں سمجھتا تھا مرے یار سمجھتے ہیں مجھے

نیک لوگوں میں مجھے نیک گِنا جاتا ہے
اور گنہ گار گنہ گار سمجھتے ہیں مجھے

جڑ اکھڑنے سے جھکی رہتی ہیں شاخیں میری
دور سے لوگ ثمَر بار سمجھتے ہیں مجھے

روشنی سرحدوں کے پار بھی پہنچاتا ہوں
ہم وطن اس لئے غدّار سمجھتے ہیں مجھے

وہ جو اُس پار ہیں اُن کے لئے اِس پار ہوں میں
یہ جو اِس پار ہیں، اُس پار سمجھتے ہیں مجھے

میں بدلتے ہوئے حالات میں ڈھل جاتا ہوں
دیکھنے والے اداکار سمجھتے ہیں مجھے

میں تو یوں جپ ہوں کہ اندر سے بہت خالی ہوں
اور یہ لوگ پر اسرار سمجھتے ہیں مجھے

میں تو خود بکنے کو بازار میں آیا ہوا ہوں
اور دکاں دار خریدار سمجھتے ہیں مجھے

لاش کی طرَح سرِ آبِ رواں ہوں شاہدؔ
ڈوبنے والے مدد گار سمجھتے ہیں مجھے

Leave A Reply

Your email address will not be published.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More