ایسے چہروں سے پیار کرتے ہیں

ایسے چہروں سے پیار کرتے ہیں
جو ہمیں سوگوار کرتے ہیں
لکڑیاں جل رہی ہیں ساتھ مرے
ہم تیرا انتظار کرتے ہیں
اپنے سینے کی چند سانسوں کو
زندگی میں شمار کرتے ہیں
بے یقینی کا ہاتھ تھامے ہوئے
ہم ترا اعتبار کرتے ہیں
اپنے آنکھوں پہ استخارے سے
خواب کو آشکار کرتے ہیں
طارق جاوید

اس پوسٹ کو شیئر کریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے